بچوں کی تربیّت۔۔۔۔؟

عورتیں، خصوصاً آج کل کی عورتیں بہت کمزور اعصاب کی مالک ہیں ہمارے کمزور اعصاب بچوں کی انتہائی جائز اور مناسب شرارتوں پر بھی چٹخنے لگتے ہیں۔۔۔ یاد رکھیں ایک لمحے کی غفلت انسان کو مربی سے ظالم بنا دیتی ہے ۔ چند الفاظ کی ذیادتی آپ کے بچے کی شخصیت سال ہا سال کے لیے مسخ کر دیتی ہے ۔
دیکھا جائےتو اس میں بچوں کا نہیں بلکہ زیادہ قصور ہمارا ہے۔ ہماری صحت اور اعصاب اگر بچوں کی عام شرارتوں اور بچپنے کے متحمل نہیں ہو رہے تو ہمیں اپنے اوپر توجہ دینے کی ضرورت ہےاپنی صحت کی بحالی کے لیے وقتاًفوقتاًکسی ماہر نفسیات سے رجوع کرنے میں کوئی حرج نہیں ۔میں اپنےذاتی تجربے کی روشنی میں یہ بات کہ رہی ہوں کہ جب میں نے اپنی ذہنی، نفسیاتی، جسمانی صحت پر توجہ دی اور انہیں بحال کرنے کے لیے مناسب علاج کا سہارا لیا تو میری گھریلو زندگی بہت بہتر ہو گئی۔

Facebook Comments

Comments are closed.